Darya Jo Charha Hai Woh Utrney Nahi Dena

دریا جو چڑھا ہے وہ اترنے نہیں دینا

دریا جو چڑھا ہے وہ اترنے نہیں دینا

یہ لمحۂ موجود گزرنے نہیں دینا

دنیا ہی نہیں دل کو بھی اس شہر ہوس میں

من مانی کسی حال میں کرنے نہیں دینا

محسوس نہیں ہوگی مسیحا کی ضرورت

یہ زخم ہی ایسا ہے کہ بھرنے نہیں دینا

مشکل ہے مگر کام یہ کرنا ہی پڑے گا

انسان کو انسان سے ڈرنے نہیں دینا

جس خواب میں روپوش ہو جینے کی تمنا

وہ خواب دل آویز بکھرنے نہیں دینا

گر دل کو جلا کر بھی دھواں کرنا پڑے تو

ان پودوں کو کہرے میں ٹھٹھرنے نہیں دینا

عبید صدیقی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1268) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Obaid Siddiqi, Darya Jo Charha Hai Woh Utrney Nahi Dena in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 38 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Obaid Siddiqi.