Kisi Ka Naqsh Andheray Mein Jab Ubhar Aaya

کسی کا نقش اندھیرے میں جب ابھر آیا

کسی کا نقش اندھیرے میں جب ابھر آیا

اداس چہرہ شب درد کا نکھر آیا

کھلے کواڑوں کے پیچھے چھپا تھا سناٹا

سفر سے ہارا مسافر جب اپنے گھر آیا

جواز ڈھونڈے وہ اپنے شکستہ خوابوں کا

میں اس کی آنکھوں سے ایسے سوال کر آیا

وہ عکس عکس خیالوں کا آئنہ نکلا

مجھے وہ شخص اجالے میں جب نظر آیا

اکھڑتی سانسوں میں کیا تھا بتاؤں کیا فکریؔ

یہی سمجھ لو کہ قصہ تمام کر آیا

پرکاش فکری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1068) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of PARKASH FIKRI, Kisi Ka Naqsh Andheray Mein Jab Ubhar Aaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 26 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of PARKASH FIKRI.