Raygan Jati Nah Kyun Phir Hama Koshi Is Ki

رائیگاں جاتی نہ کیوں پھر ہمہ کوشی اس کی

رائیگاں جاتی نہ کیوں پھر ہمہ کوشی اس کی

تھی غرض کار بہت حلقہ بگوشی اس کی

ہر طرف اس نے دیا جسم نمائی کو رواج

خوب مشہور ہوئی سایہ فروشی اس کی

بر سر عام مری چپ کی جو تشہیر ہوئی

مشتعل ہو اٹھی آواز بگوشی اس کی

منعکس ہو نہ سکی کوئی بھی صورت اس سے

یعنی بیکار گئی آئنہ پوشی اس کی

آ گیا وہ مری خورشید پناہی کے تلے

مجھ سے دیکھی نہ گئی خانہ بدوشی اس کی

بے فرشتہ ہوا کب شانہ خبر تک نہ ہوئی

مجھ پہ طاری تھی کچھ اس طرح بے ہوشی اوس کی

خاص کر لیجئے پرویزؔ کا ثانی کوئی

عام ہونے کو ہے دل دوز خموشی اس کی

پرویز رحمانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(266) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of PARWEZ RAHMANI, Raygan Jati Nah Kyun Phir Hama Koshi Is Ki in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of PARWEZ RAHMANI.