بند کریں
شاعری عاصمہ جاوید

یوں تو لاکھ گزرے ہیں چہرے ان نگاہوں‌ میں

-

yun tu lakh guzre hain chehrey in nighaoon main


(256) ووٹ وصول ہوئے