بند کریں
شاعری عازم کوہلی

خیال یار کا جلوہ یہاں بھی تھا، وہاں بھی تھا

-

Khayal e yaar ka jalwa yahaN bhi tha, wahaN bhi tha


(0) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان