بند کریں
شاعری عبدالحمید عدم

کہاں سے چل کے اے ساقی کہاں تک بات پہنچی ہے

-

kahan se chal ke


(237) ووٹ وصول ہوئے