بند کریں
شاعری احمد فراز

کچھ نہ کسی سے بولیں گے

-

kuch na kissi se bolain ge


(164) ووٹ وصول ہوئے