بند کریں
شاعری اختر شیرانی

ستم ہے کہ اے دل نہیں جاودانی

-

sitam hai k ee dil nahi


(337) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان