بند کریں
شاعری علی حسن شیرازی

کہیں سکون نہیں ہر گھڑی سفر میں ہے

-

kahin sakoon nahi


(214) ووٹ وصول ہوئے