بند کریں
شاعری انوار اللہ انور

رہتی ہے آنکھ کیوں مری نم کچھ پتہ کرو

-

rehti hai ankh kiyon mere naam kuch pata karoo


(177) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان