بند کریں
شاعری عارف عبدالمتین

روح کے جلتے خرابے کا مداوا بھی نہیں

-

Rooh kay jaltay kharabay ka madawa bhi nahiN


(0) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان