بند کریں
شاعری اعجاز ثاقب

مجھے تم بھی نہیں پہچان پائے

-

mujhe tum bhi nahi pehchaan paye


(2556) ووٹ وصول ہوئے