بند کریں
شاعری فائق اثیر

میری ہر نظم شہر آشوب ہے

-

mere haar nazar shehre ashoob hai


(220) ووٹ وصول ہوئے