بند کریں
شاعری فراق گورکھپوری

زیر و بم میں ساز خلقت کے جہاں بنتا گیا

-

Zer o Bam maiN saaz e khalqat kay jahaN banta gaya


(0) ووٹ وصول ہوئے