بند کریں
شاعری غافر شہزاد

میں زمیں زاد کہ ڈرتا تھا ترے خواب سے بھی

-

main zameenzad k darta tha there khawab se bhi


(240) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان