بند کریں
شاعری حیدرقریشی

وہ جو ابھی تک خاک میں رُلنے والے ہیں

-

wo ju abhi tak khaak main rulne wale hain


(348) ووٹ وصول ہوئے