بند کریں
شاعری حیدرقریشی

وہ جو ہم کو آزمانے لگ گئے

-

wo ju hum ko azmane lag gaye


(347) ووٹ وصول ہوئے