بند کریں
شاعری حسن عسکری کاظمی

ہم تشنہ لب تھے اور قدم تھا سراب میں

-

hum tishna lab the or qadam tha sarab main


(259) ووٹ وصول ہوئے