بند کریں
شاعری حمیرا مریم

آجا کہ مرا ضبط نظر ٹوٹ رہا ہے

-

aaja k mere zabt


(221) ووٹ وصول ہوئے