بند کریں
شاعری کاظم حسین کاظمی

چمن تو کیا ہے ادھر سایہ شجر بھی نہیں

-

chamaan tu kiya hai idher saya shajar bhi nahi


(225) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان