بند کریں
شاعری خالد مصطفی

دیوار پہ لکھا ہوا اب کون پڑھے گا

-

Dewaar pey likha


(153) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان