بند کریں
شاعری خورشید زمان

کتاب چھپ تو گئی ہے لیکن پڑی رہے گی

-

kitaab chhup tu gayi hai


(210) ووٹ وصول ہوئے