بند کریں
شاعری محموددرویش

پردہ گرتا ہے

-

parda girta hai


(190) ووٹ وصول ہوئے