بند کریں
شاعری عبدالرحمن عبدیوسفی

بات کو مسکرا کے ٹال گئے

-

baat ko muskura k taal gaye


(174) ووٹ وصول ہوئے