بند کریں
شاعری مرزاداغ دہلویدیوان داغ

دیکھوں جو مسکرا کے تم آغوش نقش پا

-

Dekhoon jo muskra


(142) ووٹ وصول ہوئے