بند کریں
شاعری مرزاداغ دہلویدیوان داغ

دل مبتلائے لذت آزار ہی رہا

-

Dil mubtlaiye


(113) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان