بند کریں
شاعری مرزاداغ دہلوی

دل کوتاکا تو مری جان جگر چھوڑ دیا

-

Dil ko taka


(121) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان