بند کریں
شاعری مرزاداغ دہلوی

غضب کیا ترے وعدے پہ اعتبار کیا

-

ghazab kiya tere waade pey


(187) ووٹ وصول ہوئے