بند کریں
شاعری معید مرزا

سوچ کر بات بنانے لگی ہے

-

soch kar baat bananay lage hai


(3) ووٹ وصول ہوئے