بند کریں
شاعری محمد خالد

پھر کوئی خواب ترے رنگوں سے جدا نہیں دیکھا

-

Phir koi khwaab teray rangoN se juda nahi dekha


(2488) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان