بند کریں
شاعری محمد شہزاد نیئربرفاب

جو سراپا بہار ہوتے ہیں

-

ju-sarapa-bahar-hote-hain


(241) ووٹ وصول ہوئے