بند کریں
شاعری نوید اکبر

دل کی نہ مانی بات تو خود سے بچھڑ گئے

-

dil ki na maani baat


(160) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان