بند کریں
شاعری نوید اکبر

ہاتھوں سے ہاتھ چھوٹ رہا تھا

-

haathon se haath chhot raha tha


(188) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان