بند کریں
شاعری ناظم الدین خلش

بیاں کیسے ہو جو زباں مانگتی ہے

-

bayan kaise hoo ju zuban mangti hai


(201) ووٹ وصول ہوئے