بند کریں
شاعری رشید ساقی

نہ میں خزف نہ گہر نہ موج ہوں نہ دریا ہوں

-

na main khizaf na guhar mooj hoon na dariyaa hoon


(240) ووٹ وصول ہوئے