بند کریں
شاعری شبہ طراز

ساگر پھیلا ہے

-

sagar phela hai


(223) ووٹ وصول ہوئے