بند کریں
شاعری زاہد شیخ

خزاں کا ڈر ہے نہ اب فکر آشیانے کی

-

khizan ka dar hai na abb fikar ashiyane ki


(235) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان