بند کریں
شاعری زاہد شیخ

نگاہیں نیند سے پُر ہیں پون کیسی سہانی ہے

-

nigahain neend se purr hain


(253) ووٹ وصول ہوئے