بند کریں
شاعری زیب غوری

شعلہءموج-طلب خون-جگر سے نکلا

-

shoae moje talab khune jigar se nikla


(0) ووٹ وصول ہوئے