بند کریں
شاعری زیب غوری

زخم پرانے پھول سبھی باسی ہو جائیں گے

-

zakhm purane phul sabhi basi hojaenge


(0) ووٹ وصول ہوئے