بند کریں
شاعری ذیشان حیدر

رگ گلو میں الفت مے پگھلتی ہے

-

rage goloo main ulfat


(203) ووٹ وصول ہوئے