بند کریں
شاعری ذیشان حیدر

زیر کی زبیق مضطر کی طرح رہتی ہے

-

zeer ki zebiak


(197) ووٹ وصول ہوئے