Karoon Ga Mein Nigahon Ki Hifazat

کروں گا میں نِگاہوں کی حِفاظت

کروں گا میں نِگاہوں کی حِفاظت

تو واجِب تُم پہ بانہوں کی حِفاظت

سجا تو لُوں لبوں پہ میں ہنسی، پر

کرُوں کیسے کراہوں کی حِفاظت

کِسی نے دو قدم پہ پائی منزِل

کرُوں کیوں اب میں راہوں کی حِفاظت

ندی، نالے کہِیں پہ بے حقِیقت

کہیں ہوتی ہے چاہوں کی حِفاظت

بھلے کُچھ بھی نہ کر پایا اگر میں

کرُوں گا درس گاہوں کی حِفاظت

غرِیب عِزّت کی رکھوالی کریں گے

کریں گے شاہ جاہوں کی حِفاظت

طلب ہے اِک نظر اُسؔ کے کرم کی

کرے جو بادشاہوں کی حِفاظت

گوارا خُود کُشی کر لُوں گا، لیکن

نہ ہو گی کج کُلاہوں کی حِفاظت

رشِید حسرتؔ! نشانی ہیں کِسی کی

کیئے جا دِل کے پھاہوں کی حِفاظت

پروفیسر رشید حسرت

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(531) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Professor Rasheed Hasrat, Karoon Ga Mein Nigahon Ki Hifazat in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 127 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Professor Rasheed Hasrat.