Tri Be Wafai Ke Baad Bhi Marey Dil Ka Pyar Nahi Gaya

تری بے وفائی کے بعد بھی مرے دل کا پیار نہیں گیا

تری بے وفائی کے بعد بھی مرے دل کا پیار نہیں گیا

شب انتظار گزر گئی غم انتظار نہیں گیا

میں سمندروں کا نصیب تھا مرا ڈوبنا بھی عجیب تھا

مرے دل نے مجھ سے بہت کہا میں اتر کے پار نہیں گیا

تو مرا شریک سفر نہیں مرے دل سے دور مگر نہیں

تری مملکت نہ رہی مگر ترا اختیار نہیں گیا

اسے اتنا سوچا ہے روز و شب کہ سوال دید رہا نہ اب

وہ گلی بھی زیر طواف ہے جہاں ایک بار نہیں گیا

کبھی کوئی وعدہ وفا نہ کر یوں ہی روز روز بہانہ کر

تو فریب دے کے چلا گیا ترا اعتبار نہیں گیا

مجھے اس کے ظرف کی کیا خبر کہیں اور جا کے ہنسے اگر

مرے حال دل پہ تو روئے بن کوئی غم گسار نہیں گیا

اسے کیا خبر کہ شکستگی ہے جنوں کی منزل آگہی

جو متاع شیشۂ دل لیے سر کوئے یار نہیں گیا

مری زندگی مری شاعری کسی غم کی دین ہے جعفریؔ

دل و جاں کا قرض چکا دیا میں گناہ گار نہیں گیا

قیصر الجعفری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1166) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of QAISAR UL JAFRI, Tri Be Wafai Ke Baad Bhi Marey Dil Ka Pyar Nahi Gaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 26 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of QAISAR UL JAFRI.