Issi Liye Tu Khud Apna Yahan Aseer Hoon Main

اسی لئے تو خود اپنا یہاں اسیر ہوں میں

اسی لئے تو خود اپنا یہاں اسیر ہوں میں

یہ مرشدوں کا زمانہ ہے اور فقیر ہوں میں

میں اس طرف بھی نہیں دوسری طرف بھی نہیں

جو دو دلوں میں پڑی ہے وہی لکیر ہوں میں

بہت حسین علاقہ ہے خوبرو ہیں لوگ

مجھے کسی سے غرض کیا کہ راہ گیر ہوں میں

کمان کھینچنے والے کو بھی نہیں معلوم

کہاں ہے مرا ہدف اور کس کا تیر ہوں میں

کسی زمانے میں زندہ شمار ہوتا تھا

اور اب جو ہوچکا مردہ وہی ضمیر ہوں میں

قمر رضا شہزاد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(219) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qamar Raza Shahzad, Issi Liye Tu Khud Apna Yahan Aseer Hoon Main in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 82 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qamar Raza Shahzad.