Khodiye

کھودئیے

کھودئیے

یہ زمیں کھودئیے

جتنا ممکن ہو گہرائی میں جائیے

اور پھر دفن کیجے ہمیں

سب سے نچلی تہوں میں

جہاں سے نکلنے کی صورت نہ ہو

جائیے ہر طرف جشن کا سلسلہ کیجئے

چیخئیے زورسے چئخئے

رقص کرتے ہوئے

اور لبوں سے ہمارے لہو کا پیالہ لگاتے ہوئے

گیت گاتے ہوئے

ہر طرف آپ ہی آپ ہوں

پھر اچانک کھلے

ہم نکل آئیں ہیں

اک نئے پیڑ کی شکل میں

جس کی ہر شاخ تلوار ہے

اور جو آپ کے سر پہ گرنے کو تیار ہے

قمر رضا شہزاد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(407) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qamar Raza Shahzad, Khodiye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 82 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qamar Raza Shahzad.