Panah Mangta Hoon Bepanah Hone Se

پناہ مانگتا ہوں بے پناہ ہونے سے

پناہ مانگتا ہوں بے پناہ ہونے سے

مجھے نہیں ہے غرض بادشاہ ہونے سے

چراغ راہ گزر ہوں یہی بہت ہے مجھے

کروں گا کیا میں یہاں مہر و ماہ ہونے سے

خدا کا شکر ادا کر مری دعا کے طفیل

بچی ہوئی ہے یہ دنیا تباہ ہونے سے

گئی نہ تیغ پلٹ کر نیام کی جانب

رکی نہ جنگ مرے صلح خواہ ہونے سے

اور اب تو آگئی رسی تمھاری گردن میں

پڑے گا فرق بھی کیا بے گناہ ہونے سے

قمر رضا شہزاد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1068) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qamar Raza Shahzad, Panah Mangta Hoon Bepanah Hone Se in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 82 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qamar Raza Shahzad.