Ishq Khushbu Se Bhare Thay Hum Bhi

عشق خوشبو سے بھرے تھے ہم بھی

عشق خوشبو سے بھرے تھے ہم بھی

تُو نے دیکھا تھا ، ہرے تھے ہم بھی

بڑھ گئی کتنی طلب جینے کی

ایک دو بار مرے تھے ہم بھی

ایک صحرا کا اُدھر رستہ تھا

تھوڑا دریا سے پرے تھے ہم بھی

جاگتی آنکھ سے دیکھا گیا تھا

خواب ایسا ، کہ ڈرے تھے ہم بھی

تو نے ہر طور سے پرکھا ہم کو

ہاں ، بہر طور کھرے تھے ہم بھی

منتظر موجِ قضا کے طاہر

مرگ ساحل پہ دھرے تھے ہم بھی

قیوم طاہر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(401) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qayyum Tahir, Ishq Khushbu Se Bhare Thay Hum Bhi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qayyum Tahir.