Tumhare Dukh Main Koi Or Dukh Main Haal Nahi Karta

تمھارے دکھ میں کوئی اور دکھ میں حل نہیں کرتا

تمھارے دکھ میں کوئی اور دکھ میں حل نہیں کرتا

یہ سونا اپنے شعروں کا ، کبھی پیتل نہیں کرتا

کبھی آدھی لکیریں کینوس کی چیخ اٹھتی تھیں

اور اب سیلاب رنگوں کا مجھے پاگل نہیں کرتا

یہ اپنی فصل ، پکنے سے بہت پہلے اجڑتی ہے

وفا مٹی نہیں کرتی ، کبھی بادل نہیں کرتا

وہ منظر نت نیا تخلیق کرتا ہے مری خاطر

وہ میرا حوصلہ قیوم طاہر شل نہیں کرتا

قیوم طاہر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(466) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qayyum Tahir, Tumhare Dukh Main Koi Or Dukh Main Haal Nahi Karta in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qayyum Tahir.