Mera Paoon Zerzameen Hai Pass Asmaan Mera Hath Hai

مرا پاؤں زیر زمین ہے پس آسماں مرا ہاتھ ہے

مرا پاؤں زیر زمین ہے پس آسماں مرا ہاتھ ہے

کہیں بیچ میں مرا جسم ہے کہیں درمیاں مرا ہاتھ ہے

یہ نجوم ہیں مری انگلیاں یہ افق ہیں میری ہتھیلیاں

مری پور پور ہے روشنی کف کہکشاں مرا ہاتھ ہے

مرے جبر میں ہیں لطافتیں مری قدر میں ہیں کثافتیں

کبھی خالق شب تار ہے کبھی ضو فشاں مرا ہاتھ ہے

کسی بحر خواب کی سطح پر مجھے تیرنا ہے تمام شب

مری آنکھ کشتیٔ جسم ہے مرا بادباں مرا ہاتھ ہے

ابھی حرف لمس وصال کے کسی منطقے پہ رکا نہیں

ابھی گنگ میرا وجود ہے ابھی بے زباں مرا ہاتھ ہے

رفیق سندیلوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(468) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rafiq Sandeelvi, Mera Paoon Zerzameen Hai Pass Asmaan Mera Hath Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 49 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rafiq Sandeelvi.